سید حسن نصر اللہ

غزہ میں احتجاجی مظاہرے صدی کے عربی اور مغربی معاملے پر زوردار طمانچہ

صہیونی غاصب حکومت سے ہمارے اختلافات ختم ہونے والے نہیں

ابنا  کی رپورٹ کے مطابق، حزب اللہ لبنان کے سیکرٹری جنرل نے جنوبی لبنان کے شہر نباطیہ میں انتخابی جلسہ عام سے ویڈیو خطاب کرتے ہوئے کہا کہ غزہ کے عوام نے اپنے واپسی مارچ کے ذریعے بہادری کے ساتھ غاصبوں کا مقابلہ کیا ہے اور وہ بدستور ان کے مقابلے میں ڈٹے ہوئے ہیں اور یہ مارچ “صدی کی ڈیل” تیار کرنے والوں کے منہ پر زور دار طمانچہ ہے ۔

انہوں نے کہا کہ امریکہ اور صہیونی ریاست لبنان میں مزاحمتی تحریک کو ختم کرنے کے لئے جو کچھ کرسکتے تھے انہوں نے کیا لیکن مزاحمتی تحریک نہ صرف کمزور نہیں ہوئی بلکہ اس کی قوت ہر لبنانی شہری کے وجود میں پائی جاتی ہے۔

سید حسن نصر اللہ نے صہیونی ریاست کے ساتھ پائے جانے والے دائمی اختلاف کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا: صہیونی ریاست سے ہمارا اختلاف کبھی ختم نہیں ہو سکتا وہ اب لبنان کے اندر اپنے اڈے قائم کرنا چاہتی ہے۔

حزب اللہ کے سیکرٹری جنرل نے لبنان کی حفاظت کے لیے بہترین راستہ قومی یکجہتی اور حزب اللہ کے ساتھ بھرپور تعاون قرار دیتے ہوئے ملک کے آئندہ عام انتخابات میں عوام کو وسیع پیمانے پر شرکت کرنے کی تاکید کی۔